مفردون سبقت لے گئے:۔

  • ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ مکہ کے راستے پرچل رہے تھے کہ ایک پہاڑ جس کو جمدان کہا جاتا تھا اس پر ان کا گزر ہوا تو فرمایا :’’چلو ،یہ جمدان ہے، مفردون سبقت لے گئے، انھوں (صحابہ)نے کہا: اللہ کے رسول! مفردون کون ہیں؟ فرمایا: اللہ کا کثرت سے ذکر کرنے والے مرد اور عورتیں‘‘۔ (اس کو امام مسلم نے 4834 نمبرپر روایت کیا ہے) مفردون کا اصلی معنی وہ لوگ ہیں جن کے ساتھی ہلاک ہو گئے ،وہ تنہا رہ گئےاور اللہ تعالی کا ذکر کرتے رہے۔ ابن الاعرابی فرماتے ہیں: ’’فرد الرجل‘‘ اس وقت کہا جاتا ہے جب وہ فقہ سیکھ لے، علیحدہ ہوجائے اور امر و نہی کا خیال کرنے میں تنہا رہ جائے۔(شرح النووی علی صحیح مسلم 4/17) شاید یہ ان سب کو شامل ہے جو نیکی، ہدایت، اچھائی ، دعوت اور لوگوں کی مدد کرنے میں تنہا رہ گیا ہو اور اسے کوئی مدد کرنے والا یا سہارا دینے والا میسر نہ ہو یا بہت ہی کم تعداد میں میسر ہو، تو یہ حدیث اس کو اس عمل پر ثابت قدم رہنے اور ہمیشگی کرنے پر ابھارنے والی بہت عظیم چیز ہے۔
  • اللغة : Urdu
  • مشاهدات : 7247
  • تحميلات : [ 3406 ] .. تحميل